’’ہم ہیں پاکستانی‘‘ ملی نغمات کی ڈی وی ڈی البم کی پُر وقار تقریبِ رونمائی

’’ہم ہیں پاکستانی‘‘ ملی نغمات کی ڈی وی ڈی البم کی پُر وقار تقریبِ رونمائی 
ملی نغموں کا ڈی وی ڈی البم، تاریخِ پاکستان میں پہلی بار، ’’ہم ہیں پاکستانی‘‘ ویو سٹوڈیو لاہور کی دھماکہ خیز ریلیز 
پاکستان کے 70 ویں جشنِ آزادی کے موقع پر مسیحی برادری کی طرف سے ملی نغموں کی صورت میں خراجِ تحسین
ویو سٹوڈیو لاہور کی تاریخ ساز اور فخریہ پیشکش 

لاہور(مسزارم عمران ) فضیلت مآب بشپ سبیسٹئین فرانسس نے الحمرا ارٹس کونسل آف لاہور میں ’’ہم ہیں پاکستانی‘‘ ڈی وی ڈی البم کی تقریبِ رونمائی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کے تمام ملی نغمے ہمیں دعوت دیتے ہیں کہ ہم خود غرضی کو رد کریں اور حب الوطنی کی تجدید کریں۔ مجھے یقین ہے کہ یہ نغمے بہت جلد ، گلی، مُحلوں اور تعلیمی اداروں کے بچوں کی زباں پر ہونگے۔ تاریخِ پاکستان پر روشنی ڈالتے ہوئے، بشپ سبیسٹئین فرانسس نے کہا کہ ملک کے بیشمار سائنسدانوں ، سیا ستدانوں بلکہ ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے قائدین نے مسیحی سکولوں سے تعلیم حاصل کی۔ اب وقت ہے کہ ہم مل جھل کر جشنِ پاکستان منائیں ۔ 
25 جولائی 2017 ایک تاریخ ساز دن تھا جب 700 سے زائد مسیحی اور مسلم شرکاء نے قومی نغموں کی ڈی وی ڈی کی پُروقار تقریبِ رونمائی میں شرکت کی اورپاکستان کے مشہور و معروف گلوکاروں کی مدھر آوازوں سے محضوظ ہوئے۔ 
تقدس مآب بشپ جوزف ارشد نے کہا کہ میں نے یہ نغمات اُس وقت لکھے جب اپنے وطن سے دور مد اگاسکر میں سفارتی خدمات سر انجام دے رہا تھا۔ ان نغمات کا مقصد نوجوانوں کو قائل کرنا ہے تا کہ وہ اپنی تمام تر خوبیوں کو وطن کی تعمیر و ترقی کے لئے استعمال کریں ۔ پاکستان کے 70 ویں جشنِ آزادی کے موقع پر مسیحی برادری کی طرف سے سارے ہم وطنوں کے لئے یہ ڈی وی ڈی البم ایک انمول تحفہ ہے۔ نوجوانوں سے خطاب کرتے ہوئے تقدس مآب بشپ جوزف ارشد نے کہا: 
قدم بڑھاتے جائیں گے
ہر منزل پاتے جائیں گے 
ہم نوجوان قوم کے، اُمیدِ پاکستان۔
ملک کے نوجوانوں! آپ سب قوم کی امید ہیں ، قوم کی آنکھیں آپ پر لگی ہوئی ہیں اور جو قومیں امید کے ساتھ جیتی ہیں وہی قومیں اپنی تقدیر بدل سکتی ہیں ۔ ہم مل جھل کر اپنی منزل آسانی سے حاصل کر سکتے ہیں اور ہماری منزل پاکستان کی بقا، سلامتی اور خوشحالی ہے ۔ 
محترمہ آسیہ ناصر نے قیامِ پاکستان میں مسیحیوں کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ ہم پاکستانی ہیں اور اپنے وطن سے پیار کرتے ہیں۔ہم ملکِ پاکستان کے لئے محبت کا جذبہ کبھی ختم ہونے نہیں دیں گے۔ انہوں نے ’’ہم ہیں پاکستانی‘‘ ڈی وی ڈی البم کے لئے بشپ جی کو اور ویو سٹوڈیو کو دلی مبارکباد پیش کی۔محترمہ آسیہ ناصر نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بشپ جی نے ایک نئے انداز میں نوجوان قوم کو حب الوطنی کا درس دیا ہے۔ ہم کہیں بھی چلے جائیں، پاکستان جیسا ملک ہمیں کہیں نہیں ملے گا اور پاکستان جیسی بہادر قوم ہمیں کہیں نہیں ملے گی۔پاکستان بنانے میں نہ صرف مسیحوں کا اہم حصہ شامل ہے بلکہ اس کی ترقی کے لئے آج بھی کوشاں ہیں۔ حاضرینِ محفل کو دعوت دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں بشپ جی کے نغموں کے ذریعے امن ، محبت، اخوت اورایمانداری کا جو سبق ملا ہے اس پر عمل پیرا ہونا ہم سب کا فرض ہے تا کہ ہمارا ملک ترقی کی منازل طے کرسکے۔ 
ریورنڈ فادر قیصر فیروز نے ،ملی نغموں کے ڈی وی ڈی البم کو متعارف کرواتے ہوئے کہا کہ اِن ملی نغموں کے شاعر و موسیقار تقدس مآب بشپ جوزف ارشد ہیں ۔ انہوں نے رنگ و نسل اور عقیدے سے بالا تر ہو کر ساری قوم کو مثبت پیغام دیا ہے۔ ڈی وی ڈی البم کی صورت میں ملی نغمات کا یہ خوبصورت مجموعہ پاکستان کے ثقافتی ورثہ میں ایک تاریخ ساز اضافہ ہے۔ بشپ جوزف ارشد نے پاکستان کی 70 ویں سالگرہ کے موقع پر مسیحی برادری کی طرف سے پاکستان کو خراجِ تحیسن پیش کر کے ساری مسیحی قوم کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے۔ 
پاکستان کے قومی شاعر جناب نذیر قیصر صاحب نے کہا کہ ویو سٹوڈیو کی یہ پروڈکشن انتہائی اعلیٰ میعار کی ہے۔ موسیقی اور فنونِ لطیفہ کا کسی معاشرے میں فروغ ، پُر امن لوگوں کو جنم دیتا ہے۔ موسیقی اور فنونِ لطیفہ کو کسی بھی معاشرے میں دبا دینے سے طالبان پیدا ہوتے ہیں ۔ تقدس مآب بشپ جوزف ارشد نے ان نغمات کے ذریعے امن اور سماجی ہم اہنگی کا خوبصورت پیغام دیا ہے۔ 
پروفیسر جیکب پال نے کہا کہ تقدس مآب بشپ جوزف ارشد نے قومی نغموں کے ذریعے قائد اعظم کے نظریہ کو بڑے تخلیقی انداز میں فروغ دیا ہے جس کی سب پاکستانیوں کو اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ موسیقی کی زبان ایک خوبصورت زبان ہے اور بشپ جی نے اسی زبان کے ذریعے امن اور سلامتی کا پیغام دیا ہے۔ سینٹ جوزف پیرش کے Leading Stars گروپ نے ملی نغمات پر ثقافتی رقص پیش کیا تہ خیمۂ اجتماع خوشی سے جھوم اُ ٹھا اور پاکستان زندہ آباد کے نعرے لگانے شرع کر دئے۔ 
نظامت کے فرائض مسز ارم اور عامر سہیل، ریڈیو ویریتاس ایشیا اردو سروس کے پروڈیوسرز نے ادا کئے۔